Urdu Class 10th Khatoot e Ghalib Notes MCQs Questions Bank

urdu 10th notes Sabaq 13

1.  میر ن صاحب لکھنؤ میں پڑھتے تھے ۔

 
 
 
 

2.  مرزا حاتم علی صاحب کی تحویل میں کتابیں ۔

 
 
 
 

3.  غالب کے خطوط مرتب کئے ہیں۔ 

 
 
 
 

4.  کول کس شہر کا پرانا نام ہے ؟

 
 
 
 

5. غالب نے تفتہ کو دوسرا خط کب لکھا ؟ 

 
 
 
 

6.  پون ٹوئی (جنگی ) کس چیز پر معاف تھی ؟

 
 
 
 

7.  ہم تو ۔۔۔۔۔۔تمہار ے خط کے آنے کے منتظر تھے ۔

 
 
 
 

8. مرزا غالب کو تفتہ کا خط کہا ں سے آنا تھا ؟

 
 
 
 

9. کس شخص نے کتابو ں کی شیرازہ بندی کے بارے میں مرزا کو خط لکھا ؟

 
 
 
 

10. مرزا غالب پیدا ہوئے ۔  

 
 
 
 

11.  مرزا غالب کی وفات ہوئی ۔

 
 
 
 

12. دوسرے خط کے مطابق مرزا غالب کو کتنی کتابیں موصول ہوئیں ؟

 
 
 
 

13.  خاندان مغلیہ کی تاریخ لکھنے کے بدلے میں پیسے ملے ۔

 
 
 
 

14.  میر مجروح کے خط میں کس کی بیٹی کی پیدائش کا ذکر ہے ؟ 

 
 
 
 

15.  مرزا غالب کی پرورش کی ۔  

 
 
 
 

16. غالب کی کتابوں کے متعلق مرزا مہر نے کتنا عرصہ بتایا ؟

 
 
 
 

مختصر سوالات

’’مجتہد الحصر ‘‘سے کیا مراد ہے ؟
مرزا غالب نے منشی ہر گو پال کو فارسی میں کیا لکھا ؟ 
مرزاغالب نے منشی ہر گوپا ل تفتہ کو خط کب لکھے ؟
مرزا غالب کی تصانیف کے بارے لکھیں ۔ 
مرزا غالب کیسے ادیب تھے اور اُن کی وفات کب ہوئی 
مرزا غالب کی آمدنی کے ذرائع کیا تھے ؟
 مرزا غالب کی شادی کب اور کہا ں ہوئی ؟
مرزا کی پرورش کیسے ہوئی ؟ 
 مرزا غالب کا اصل نام اور تخلص کیا تھا ؟ 
مرزا غالب کب اور کہا ں پیدا ہوئے ؟ 
 تفتہ نے مرزا غالب کو کہا ں سے خط لکھا تھا ؟ 
مرزا غالب نے کتابوں پر کیا رائے دی ہے ؟
کو ن سی دوچیز وں پر ٹیکس وصول نہیں کیا جاتا تھا؟   
 مرزا غالب نے میر مہدی حسین مجروح کو خط کب لکھا ؟ 
 مرزا غالب نے میر مہدی حسین مجرح کو خط ، بیرنگ کیوں بھیجا ؟

تفصیلی سوالات

“درج ذیل نثر پارے کی تشریح کیجیے۔ خط کشیدہ الفاظ کے معانی، سبق کا عنوان اور مصنف کا نام بھی لکھیے۔
ہاں صاحب انشی بالمکند بے صبر کے ایک خط کا جواب ہم پر فرض ہے ۔میں کیا کروں؟ اس خط میں انھوں نے اپنا سیروسفرمیں مصروف ہونا لکھا تھا۔ بس میں ان کے خط کا جواب کہاں بھیجتا ؟ اگر تم سے ملیں تو میرا سلام کہ دینا اور مطبع آگرہ سے کتابوں کا حال تم خود دریافت کر ہی لو گے ، میرے کہنے اور لکھنے کی کیا حاجت؟”
“درج ذیل نثر پارے کی تشریح کیجیے۔ خط کشیدہ الفاظ کے معانی، سبق کا عنوان اور مصنف کا نام بھی لکھیے۔
نہ کا غذ ہے، نہ ٹکٹ ہے،اگلے لفافوں میں سے ایک بیرنگ لفافہ پڑا ہے ۔ کتاب میں سے ہی کاغذ پھاڑ کرتم کو خط لکھتا ہوں اور بیرنگ لفافے میں لپیٹ کر بھیجتاہوں. غمگین نہ ہونا ۔ کل شام کو کچھ فتوح کہیں سے پہنچ گئی ہے، آج کاغذ اور ٹکٹ منگالوں گا۔ سہ شنبہ ۸ نومبر صبح کا وقت ہے، جس کو عوام بڑی فجر کہتے ہیں ۔ پرسوں تمھارا خط آیا تھا ، آج جی چاہا کہ ابھی تم کو خط لکھوں ، اس واسطے یہ چند سطریں لکھیں ۔”
“درج ذیل نثر پارے کی تشریح کیجیے۔ خط کشیدہ الفاظ کے معانی، سبق کا عنوان اور مصنف کا نام بھی لکھیے۔
شہرکا حال کیا جانوں کیا ہے؟ ’’پون ٹوٹی کوئی چیز ہے، وہ جاری ہوگئی ہے۔سواۓ اناج اورا پلے کے کوئی چیز ایسی نہیں، جس پرمحصول نہ لگا ہو۔ جامع مسجد کے گرد پچیس پچیس فٹ گول میدان نکلے گا۔ دکانیں حویلیاں ڈھائی جائیں گی ۔دارالبقا فنا ہو جاۓ گی ۔ رہے نام اللہ کا۔ خان چند کا کوچہ شاہ بولا کے بڑ تک ڈھے گا۔ دونوں طرف سے پھاوڑا چل رہا ہے۔ باقی خیر و عافیت ہے۔ حاکم اکبر کی آمدسن رہے ہیں ۔ دیکھیے دلی آئیں یا نہیں؟ آئیں تو دربارکریں یانہیں؟ دربارکریں تو میں گنہ گار بلایا جاؤں یانہیں؟ بلایا جاؤں تو خلعت پاؤں یانہیں؟ پنسن کا تو نہ کہیں ذکر ہے ، نہ کسی کوخبر ہے ۔”
سبق خطوط غالب کا خلاصہ لکھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *