2nd Year Urdu Sabaq 10 Qartaba ka Qazi MCQs Short Notes

urdu 12th sabaq No 10

1. زبیر نے مقتول کو کیوں قتل کیا تھا؟

 
 
 
 

2. سبق” قرطبہ کا قاضی‘‘ کس مصنف کا لکھا ہوا ہے؟

 
 
 
 

3. قاضی نے اپنے کسی عزیز کی پھانسی کا حکم سنایا ؟

 
 
 
 

4. زبیر قرطبہ کے قاضی کا کیا لگتا تھا ؟

 
 
 
 

5. قرطبہ کے قاضی کا نام کیا تھا ؟

 
 
 
 

6. قرطبہ کا قاضی‘‘ کیسا ڈراما ہے؟

 
 
 
 

7. کوس رحلت بجتے ہی قاضی باہرآ یا تو عوام نے کس رد عمل کا اظہار کیا؟

 
 
 
 

8. قرطبہ کا قاضی‘ ڈرامے میں عبداللہ کون ہے؟

 
 
 
 

9. مقتول کون تھا؟

 
 
 
 

10. حلاوہ زبیر کی کیا لگتی ہے؟

 
 
 
 

11. زبیر کا جرم کیا تھا؟

 
 
 
 

12. بیٹے کی پھانسی کے بعد قاضی نے کیا کیا ؟

 
 
 
 

13. زبیر کو پھانسی دینے کی خدمت کس نے سرانجام دی؟

 
 
 
 

سیاق و سباق کے حوالے سے درج ذیل اقتباس کی تشریح کیجئے۔ سبق کا عنوان اور مصنف کا نام بھی تحریر کیجئے۔

 میری بوڑھی زبان سے اللہ تعالی کا عفو و رحم کئی بار بولالیکن ہر بار اس نے سننے والے کانوں کو بہرہ پایا۔ پراب کی بار میری التجا سن لیجیے یا مجھے ہمیشہ کے لیے خاموش کر دیجیے۔ میرے حضور! بیوہ بدنصیب بول رہی ہے جس نے مجرم کی ماں کے اٹھ جانے کے بعد اپنی اولاد کی طرح اسے کلیجے سے لگایا۔ میرے حضور! خود آپ نے اسے مجھے دے ڈالا تھا۔ میں تھی جس نے اسے زندگی دی اور توانائی بخشی کہ وہ بڑھ کر مرد بن جاۓ ۔ میرے حضور! کیا آپ ہی مجھ سے وہ زندگی چھین لیں گے؟ اسے ، جسے تب میں نے زندگی بخشی تھی ۔ اب وہ جوان ہے ۔ آپ کا گوشت اور خون ہے ۔ اسے زندہ نہیں رہتا تھا تو یہ سب میں نے کیا کیوں تھا؟ فریاد سننے والا باپ ہے، تو پروردگار! اولاد کے لیے التجا میں کیوں کر رہی ہوں؟ وہ آپ کا ہے ۔ میرا نہیں ۔ اسے آپ نے پیدا کیا ، میں نے نہیں ۔ ایک اور عورت اسے جننے میں اس جہاں سے گزرگئی تھی ۔
سیاق و سباق کے حوالے سے درج ذیل اقتباس کی تشریح کیجئے۔ سبق کا عنوان اور مصنف کا نام بھی تحریر کیجئے۔

 میں بک جو رہا ہوں نہیں کریں گے ، آج کے دن صرف شہر میں وہی شخص داخل ہونے پاۓ گا ، جو کلام پاک کی قسم کھائے گا کہ اسے نوجوان زبیر کی سزا سے کچھ سروکار نہ ہو گا۔ کجھی ، گوڑھ مغز! ہمارے آدمی تمام راستوں پر پھیل چکے، ایک ایک نا کے کوروک چکے ۔ جس شخص نے قسم نہ کھائی کہ زبیر کا خون اس کے دوش پر نہ ہوگا ، وہ اندر نہ گھنے پائے گا اور یہی جواب قاضی کے حکم پر خود اس کو دیا جاۓ گا۔ وہ قانون کا غلام ہو یا سلطان کا ۔ آج کے دن اس کے فتوے کی تعمیل نہ ہونے پاۓ گی ۔
درج ذیل نصابی سبق کا خلاصہ لکھئے اور مصنف کا نام بھی تحریر کیجئے۔
 قرطبہ کا قاضی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *